کورونا وائرس کی عالمگیر وباء سے متعلق اپنے بچوں سے گفتگو کرنا

کورونا وائرس کے بارے میں ہر جگہ خبریں گردش کر رہی ہیں لہذا ہم بچوں کو پریشان کن معلومات سے محفوظ نہیں رکھ سکتے ۔ البتہ آپ ایک کھلی اور دیانت دارانہ گفتگو کے ذریعے اپنے بچوں پر منفی اثر کو کم کرسکتے ہیں۔

1.مان لیں کہ اس بارے میں تشویش ہونا درست ہے

بچے کی طرف سے ایسی غیر یقینی صورتحال جو آپ محسوس کر رہے ہوں یا ایسی کہانیاں سننا جو عمر کی مناسبت سے بیان نہیں کی جاتیں ان کو سمجھنے کا امکان ہوتا ہے۔

ان کے ساتھ مل کر خدشات اور سوالات کا جائزہ لیں اور انہیں بتائیں کہ آپ کو اس طرح کے واقعات پریشان کن لگتے ہیں۔ انھیں بتائیں کہ ان کے بدترین خوف کے سچ ثابت ہونے کا امکان نہیں ہے۔ ان کے ساتھ گفتکو کو اس احساس پر ختم کر کے چھوڑنا چاہئے کہ اگرچہ بری چیزیں رونما ہوسکتی ہیں، تاہم، دنیا کے ماہرین سمیت بہت سے لوگ وبائی امراض کے اثرات کو کم کرنے کے لئے سخت کوشش کر رہے ہیں، لہذا انہیں ہر وقت خوفزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔

کوشش کریں کہ آپ کے خوف کے بارے میں ان کے کانوں تک کوئی بات نہ پہنچے۔ بچے ہمارے خیال سے کہیں بڑھ کر باتیں سن لیتے ہیں، وہ ان کی غلط تشریح کرسکتے ہیں یا اپنے جذبات کو آپ سے پوشیدہ رکھ سکتے ہیں۔

2. خبریں جذب کرنے میں توازن رکھیں

قابل اعتماد ذرائع سے حقیقی زندگی کے بارے میں چھوٹی چھوٹی مقدار میں خبریں مددگار ثابت ہوتی ہیں۔ بہت زیادہ معلومات نقصان پہنچا سکتی ہیں اس لیے توازن ضروری ہے۔ بچوں کو زبردستی خبریں دینا یا خبروں سے انہیں بچانے کی بہت زیادہ کوشش کرنا غیر مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔

جب وہ کمرے میں آئیں تو ٹیلیویژن یا ویب پیجز بند کرنے سے گریز کریں۔ اس سے انہیں یہ جاننے میں دلچسپی پیدا ہوسکتی ہے کہ حقیقت میں کیا ہو رہا ہے۔ اور یہ کہ ان کا تخیل ان پر قابو پا لیتا ہے۔

3. انہیں حقائق سے آگاہ کریں اور تحفظ فراہم کریں

تمام بچے یہاں تک کہ نوعمر بھی جاننا چاہتے ہیں کہ ان کے والدین انہیں محفوظ رکھ سکتے ہیں۔ محفوظ انداز سے گفتگو کرنے کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ خبروں پر واضح، پراعتماد، شفاف اور سچے حقائق کے ساتھ بات کی جائے۔ بطور ایک مثال ہاتھ دھونے کی اہمیت کی وضاحت کرتے ہوئے ان سے دریافت کریں کہ وہ اپنے اور دوسروں کی دیکھ بھال کے لیے کیا کچھ کرسکتے ہیں۔

یہ معلوم کرکے دیکھیں کہ آیا وہ دوستوں کے ساتھ عالمگیر وبائی مرض پر بحث کر رہے ہیں - خاص طور پر اگر انہیں اسکول کے دوستوں سے رابطے میں رہنے کے لئے میسنجر ایپس تک رسائی حاصل ہے۔ انہیں یقین دلائیں کہ وہ آپ سے سوالات پوچھ سکتے ہیں۔

4.مصیبت زدگی اور ذمہ داری کے بارے میں گفتگو کریں

واضح کریں کہ مصیبت زدگی کوئی کمزوری نہیں ہے؛ بلکہ یہ غیر یقینی صورتحال اور خطرے کا سامنا کرنے کا ایک قدرتی ردعمل۔ اس بارے میں وضاحت کریں کہ اس وبائی مرض کے دوران زندگی بسر کرنے کے کیا معنی ہو سکتے ہیں اور وہ افراد جو مصیبت زدہ ہیں ان کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے کونسے اقدامات بروئے کار لائے جا چکے ہیں۔

اس موقع کو بچوں کو ذمہ دار شہری بننے کی تعلیم دینے کے لیے استعمال کریں۔ رہنمائی پر عمل کرنے کا مطلب اس بات کا ادراک ہے کہ یہ معاملہ افراد سے بڑھ کر ہے لہذا ہمیں ایک دوسرے کی حفاظت کرنی چاہئے۔

انہیں اس بات کی یادہانی کروائیں کہ ڈانٹ ڈپٹ ہمیشہ غلط ہوتی ہے اور یہ کہ ہم سب کو ہمدردی پھیلانے اور ایک دوسرے کا ساتھ دینے کے لئے اپنا اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔

آپ کے لئے اچھے وسائل دستیاب ہیں جن میں بچوں کے لیےکرونا وائرس سے متعلق چلڈرن کمشنرکا ہدایت نامہ یہاں پر موجود ہے یا ایجنسیوں کے مابین قائمہ کمیٹی نے یہاں پرکورونا وائرس (کوویڈ-19) سے متاثرہ دنیا بھر کے بچوں کی طرف سے بچوں کے لئے ایک اسٹوری بک تیار کی ہے۔ اسکاٹ لینڈ میں ایلیدھ نے جو اسکاٹ لینڈ کے چلڈرن کمشنر کے لئے ایک نوجوان مشیر ہیں وبائی امراض کے دوران مصروف رہنے کے لیےچوٹی کے راز [top tips] تحریر کی ہے۔

This translation was funded by Foundation Scotland and the National Emergencies Trust and distributed by the Scottish Refugee Council.